Allama Iqbal Poetry in Urdu, English with Beautiful Images

Allama Iqbal Poetry on Karbala

allama iqbal poetry karbala

Allama Iqbal Poetry on Karbala

نکل کر خانقاہوں سے ادا کر رسم شبیری
کہ فقر خانقاہی ہے فقط اندوہ دلگیری

Nikal ker khankahon se ada ker Rasm-e-Shabiri,
Kh faqar khankahi ha faqat andoh dilgiri.

—————————–

عجب مذاق ہے اسلام کی تقدیر کے ساتھ
کٹا حسین کا سر نعرہ تکبیر کے ساتھ

Ajab mazaq hai, Islam ki taqdeer ke sath,
Kata Hussain ka sar Nahra-e-Takbeer ke sath.

—————————–

اللہ سے کرے دور ، تو تعلیم بھی فتنہ
املاک بھی اولاد بھی جاگیر بھی فتنہ

Allah se kere dur, tu taleem bhi fitna,
Amlak bhi aulad bhi jageer bhi fitna.

نا حق کے لیے اٹھے تو شمشیر بھی فتنہ
شمشیر ہی کیا نعرہ تکبیر بھی فتنہ

Nahak ke ley uthe tu shamseer bhi fitna,
Samsheer hi kia Nahra-e-Takbeer bhi fitna.

—————————–

Add Comment