Sad Urdu Poetry SMS | Broken Heart Poetry Shayari SMS Pics

Sad Poetry SMS of Famous Poets

Ay muhabat tere anjam pe rona aaya,
Jaany kion aaj tere naam pe rona aaya.

اے محبت ترے انجام پہ رونا آیا
جانے کیوں آج ترے نام پہ رونا آیا

شکیل بدایونی

——————

Na jaane kis ley umeedwar betha hon,
Ek aysi rah pe teri rah guzer bhi nahi.

نہ جانے کس لیے امیدوار بیٹھا ہوں
اک ایسی راہ پہ جو تیری رہ گزر بھی نہیں

فیض احمد فیض

——————

Ab tu khushi ka gham ha na gham ki khushi mujhy,
Behis bana chuki ha bahot zindagi mujhey.

اب تو خوشی کا غم ہے نہ غم کی خوشی مجھے
بے حس بنا چکی ہے بہت زندگی مجھے

شکیل بدایونی

——————

Kon roota ha kisi aur ki khatir ay dost,
Sab ko apni hi kisi bat pe rona aaya.

کون روتا ہے کسی اور کی خاطر اے دوست
سب کو اپنی ہی کسی بات پہ رونا آیا

ساحر لدھیانوی

——————

Kisi ke tum ho kisi ka khuda ha dunya men,
Mere nasib men tum nahi khuda bhi nahi.

کسی کے تم ہو کسی کا خدا ہے دنیا میں
مرے نصیب میں تم بھی نہیں خدا بھی نہیں

اختر سعید خان

——————

Tera milna khushi ki bat sahi,
Tujh se mil ker udas rehta hon.

تیرا ملنا خوشی کی بات سہی
تجھ سے مل کر اداس رہتا ہوں

ساحر لدھیانوی

——————

Abhi na cher muhabat ke geet ae mutrib,
Abhi hayat ka mahol khush gawar nahi.

ابھی نہ چھیڑ محبت کے گیت اے مطرب
ابھی حیات کا ماحول خوش گوار نہیں

ساحر لدھیانوی

——————

خدا کی اتنی بڑی کائنات میں میں نے
بس ایک شخص کو مانگا مجھے وہی نہ ملا

بشیر بدر

Khuda ki itni bari kainat men mein ne,
Bas aik shakas ko manga mujhy wohi na mila.

——————

Dunya ki mahfilon se ukta gia ho yarab,
Kia lutaf e anjaman ka dil hi bhujh kia ho.

دنیا کی محفلوں سے اکتا گیا ہوں یا رب
کیا لطف انجمن کا جب دل ہی بجھ گیا ہو

علامہ اقبال

——————

Ham tu samjhy the keh ham bhol gay hain unko,
Kia hoa aaj ye kis bat pe rona aaya.

ہم تو سمجھے تھے کہ ہم بھول گئے ہیں ان کو
کیا ہوا آج یہ کس بات پہ رونا آیا

ساحر لدھیانوی

——————

Ham gham dada hain lain kahan se khushi ke geet,
Dain ge wohi jo paain ge us zindagi se ham.

ہم غم زدہ ہیں لائیں کہاں سے خوشی کے گیت
دیں گے وہی جو پائیں گے اس زندگی سے ہم

ساحر لدھیانوی

——————

Hamare ghar ki diwaron pe Nasir,
Udasi bal khole so rahi hai.

ہمارے گھر کی دیواروں پہ ناصرؔ
اداسی بال کھولے سو رہی ہے

ناصر کاظمی

——————

Sham hi thi dhonwan dhonwan husan bhi tha udas udas,
Dil ko kain kahanian yad si aa ke reh gain.

شام بھی تھی دھواں دھواں حسن بھی تھا اداس اداس
دل کو کئی کہانیاں یاد سی آ کے رہ گئیں

فراق گورکھپوری

——————

Jab howa ziker zamane mein mihabat ka Shakeel,
Mujh ko apne dil e nakam pe rona aaya.

جب ہوا ذکر زمانے میں محبت کا شکیلؔ
مجھ کو اپنے دل ناکام پہ رونا آیا

شکیل بدایونی

——————

Deewaron se mil ker rona acha lagta hai,
Ham bhi pagal ho jain ge aysa lagta hai.

دیواروں سے مل کر رونا اچھا لگتا ہے
ہم بھی پاگل ہو جائیں گے ایسا لگتا ہے

قیصر الجعفری

——————

Ham ko na mil saka tu fakat ek sakon e dil,
Ae zindagi wagarna zamane men kia na tha.

ہم کو نہ مل سکا تو فقط اک سکون دل
اے زندگی وگرنہ زمانے میں کیا نہ تھا

آزاد انصاری

——————

Un ka gham un ka tasawar un ke shikwy ab kahan,
Ab tu ye batain bhi ae dil ho gain aai gai.

ان کا غم ان کا تصور ان کے شکوے اب کہاں
اب تو یہ باتیں بھی اے دل ہو گئیں آئی گئی

ساحر لدھیانوی

——————

Judaion ke zakam dard e zindagi ne bhar dey,
Tujhy bhi neend aa gai mujhy bhi sabar aa gia.

جدائیوں کے زخم درد زندگی نے بھر دیے
تجھے بھی نیند آ گئی مجھے بھی صبر آ گیا

ناصر کاظمی

——————

Ishaq men kon bat sakta ha,
Kis ne kis se sach bola.

عشق میں کون بتا سکتا ہے
کس نے کس سے سچ بولا ہے

احمد مشتاق

——————

کوئی خودکشی کی طرف چل دیا
اداسی کی محنت ٹھکانے لگی

عادل منصوری

Koi kudkash ke taraf chal dia,
Udasi ke mehnat thekane lagi.

——————

Mayoosi maal e muhabat na puchy,
Apnon se pesh aay hain begangi se ham.

مایوسئ مآل محبت نہ پوچھئے
اپنوں سے پیش آئے ہیں بیگانگی سے ہم

ساحر لدھیانوی

——————

Uthtey nahi hain ab tu dua ke ley bhi hath,
Kis darja naumeed hain Perwardegar se.

اٹھتے نہیں ہیں اب تو دعا کے لیے بھی ہاتھ
کس درجہ ناامید ہیں پروردگار سے

اختر شیرانی

——————

Mujh se nafat hai agar us ko tu izhar kery,
Kab men kehta hon mujhy payar bhi kerta jay.

مجھ سے نفرت ہے اگر اس کو تو اظہار کرے
کب میں کہتا ہوں مجھے پیار ہی کرتا جائے

افتخار نسیم

——————

Randomly Chosen | Sad Poetry

Daikh is baraf ne kiya aag laga rakhi hay
Aadhi dunya pagal, aadhi shaair bana rakhi hay!

دیکھ اس بے وفا نے کیا آگ لگا رکھی ہے
آدھی دنیا پاگل، آدھی شاعر بنا رکھی ہے

——————

Mana ke raat bohat ho chuki, sonay ka waqt hy
Per kiya keroon qalam se utarne ko khialaat baaqi hain!

مانا کہ رات بہت ہو چکی، سونے کا وقت ہے
پر کیا کروں قلم سے اترنے کو خیالات باقی ہیں

——————

Jo Batain Pee Gaya Tha Main
Wo Baatain Khaa Gaen Mujh Ko!

جو باتیں پی گیا تھا میں
وہ باتیں کھا گئیں مجھ کو

——————

Meri tabahiyon main tera haath hay
Lakin hum sub se keh rahay hain muqaddar ki baat hay!

میری طبیعت میں تیرا ہاتھ ہے
لیکن ہم سب سےکہ رہے ہیں مقدر کی بات ہے

——————

Nazar kha gyee hum dono ki mohabbat ko
Roz baat kernay walay ab khamoosh rehtay hain!

نظر کھا گئی ہم دونوں کی محبت کو
روز بات کرنے والے اب خاموش رہتے ہیں

——————

Dil ko isi guman main rakha hay umar bhar,
Is imtihan ke baad aur koi imtihan nahi…!

دل کو اِسی گمان میں رکھا ہے عمر بھر
اِس امتحان کے بعد اور کوئی امتحان نہیں

——————

Ae mohabbat apni swari se utar de mujhe
Bohat thak gaya hon tere sath chalte chalte!

اے محبت اپنی سواری سے اتار دے مجھ کو
بہت تھک گیا ہوں، تیرے ساتھ چلتے چلتے

——————

Apnay Lehjay Pay Goor Kar Kay Bata
Lafz Kitay Hain، Teer Kitnay Hain ?

‏اپنے لہجے پہ غور کر کے بتا
لفظ کتنے ہیں، تیر کتنے ہیں

——————

Tum Rakh Na Sako Gay Mera Tohfa Sanbhaal Kar
Warna Day Don Roh Jism Se Tujh Ko Nikaal Kar

پھر یوں ہوا کے رفتہ رفتہ ہوگئی بے معنی
میری بات بھی میری زات بھی

——————

Is Se Pehlay Kay Jaan Jaey
Us Se Keh Do Kay Maan Jaen..!

اس سے پہلے کہ جان جاۓ
اس سے کہہ دو کہ مان جاۓ

——————

Dil Main Tasweer Teri Aankh Main Aasaar Tere
Zakham Hathon Main Liay Phirtay Hain Bemaar Tere!

Zindagi Kab Ki Khamosh Hogae
Dil To Bas Aad’tan Dharakta Hai!

زندگی کب کی خاموش ہوگئی
دل تو بس عادتن دھڑکتا ہے

——————

Aa daikh meri aankh ke bheegay howe mausam
Ye kis ne keh diya ke tujhay bhool gay hum!

آ دیکھ میری آنکھ کے بھیگے ہوۓموسم
یہ کسی نے کہ دیا کہ تجھے بھول گئے ہم

——————

Karnay Hain Agar Shikway Mehboob Se
Phr Choor Day Muhabbat Koi Aur Kaam Kar!

کرنے ہیں اگر شکوے محبوب سے
پھر چھوڑ دے محبّت کوئی اور کام کر

——————

Add Comment