Sad Death Poetry in Urdu About Love, Mother, Father

The time of death is fixed for everyone. No matter how long a person lives, He / She must die one day. Man becomes very sad and upset, especially when a close friend or family member dies, man is broken and it seems that his life is over now and his life is pointless. But man has to live by suppressing these sorrows and hiding the worries. Here is some death poetry in Urdu which may cure your sorrows.

Death Poetry in Urdu 2 Lines

Sad death poetry

Sad death poetry

بچھڑا کچھ اِس ادا سے کہ رُت ہی بدل گئی
اِک شخص سارے شہر کو…. ویران کر گیا

Bichda Kuch Is Ada Se Kh Rut Hi Badal Gai
Ik Shakhs Saare Shehar Ko Viran Kar Gaya

↔↔↔↔↔↔↔

Maut poetry urdu

Emotional maut poetry urdu

آگاہ اپنی موت سے کوئی بشر نہیں
سامان سو برس کا ہے، پل کی خبر نہیں

Agah Apni Mout Sai Koi Bashar Nahi
Saman Sou Baras Ka Hai, Paal Ki Khabar Nahi

↔↔↔↔↔↔↔

Maut quotes urdu

Maut quotes urdu

لوگ جوق در جوق ، چلے جاتے ہیں
نہیں معلوم ، تہہ خاک تماشہ کیا ہے

Log Jok Der Jok Chale Jaate Hain
Nahi Maloom Teh Khak Tamasha Kia Hai

↔↔↔↔↔↔↔

!موت بھی کم خوبصورت تو نہیں ہوتی ہوگی
جو بھی اس سے ملتا ہے جینا چھوڑ دیتا ہے

Mout Bhi Kam Khobsorat Tou Nahi Hoti Hogi
Jo Bhi Iss Sai Milta Hai Jena Choor Daita Hai

↔↔↔↔↔↔↔

موت کا بھی علاج ہو شاید
زندگی کا کوئی علاج نہیں

Maut Ka Bhi Ilaaj Ho Shaayad
Zindagi Ka Koi Ilaaj Nahi

↔↔↔↔↔↔↔

مار ڈالا ہے زندگی نے تو
جان نکلے تو کچھ قرار آے

Mar Dala Hai Zindagi Nai Tou
Jaan Niklay Tou Koch Qrar Aye

↔↔↔↔↔↔↔

ایک لمحے میں موت کا فرشتہ آتا ہے
پھر گھر اور بستر سب بدل جاتا ہے

Aik Lamhae Mai Mout Ka Frishta Ata Hai
Phir Ghar Aur Bistar Sab Badal Jata Hai

↔↔↔↔↔↔↔

Mother Death Poetry

Mother death poetry

Mother death poetry

زندگی کے سفر میں گردشوں کی دھوپ میں
جب کوئی سایا نہیں ملتا تو یاد آتی ہے ماں

Zindgi ke safar mein gardishon ki dhop mein
Jab koi saya nhi milta tu yaad aati hai Maan

↔↔↔↔↔↔↔

گھر سُونا کر جاتی ہیں
مائیں جانیں کیوں مر جاتی ہیں

Ghar suna ker jaati hain
Maain jab mar jaati hain

↔↔↔↔↔↔↔

پوچھتا ہے جب کوئی کہ دنیا میں محبت ہے کہاں؟
مسکرا دیتا ہوں میں اور یاد آ جاتی ہے ماں

Puchta hai jab koi kh duniya mein muhabat hai kahan
Muskra dita hon mein aur yaad aati hai Maan

↔↔↔↔↔↔↔

تیری آغوش میں جنت اور جہاں دونوں کا سکون تھا
اِس پتھر پہ سَر رکھ كے مجھ سے سویا نہیں جاتا اے ماں

Teri aaghush mein janat aur jahan dono ka sakoon tha
Is pathar pe sar rakh ke mujh sy suya nhi jata ae Maan

↔↔↔↔↔↔↔

لبوں پہ اس كے بد دعا نہیں ہوتی
بس اک ماں ہے جو خفا نہیں ہوتی

Labon pe us ke badoa nhi hoti
Bas ik Maan hai jo khafa nhi hoti

↔↔↔↔↔↔↔

مجھے محبت ہے اپنے ہاتھوں کی سبھی انگلیوں سے باسط
نہ جانے کس انگلی کو پکڑ کر میری ماں نے مجھے چلنا سکھایا

Mujhy muhabat hai apne hathon ki sabhi unglion se Basit
Na jane kis angli ko pakar ker meri Maan ne mujhy chalna sikhaya tha

↔↔↔↔↔↔↔

آئینہ دیکھ کر خوش ہیں میری آنکھیں بے حد
میرے چہرے میں میری ماں کی مشابہت بھی ہے

Aaina dekh ker khush hain meri aankhain be had
Mery chehry mein meri Maan ki musbahat bhi hai

↔↔↔↔↔↔↔

اُسی کے نام سے تھی ابتدائے خوس خطی
لفظ جتنے میں نے لکھے سب سے بہتر ماں لکھا

Usi ke naam se thi ibtaday khush khati
Lafaz jitne mein ne likhe sab se behter Maan likha

↔↔↔↔↔↔↔

Father Death Poetry

Father death poetry

Father death poetry

عزیز تر مجھے رکھتا تھا وہ رگ جاں سے
یہ بات سچ ہے میرا باپ کم نہ تھا ماں سے

وہ ماں کے کہنے پہ کچھ روک مجھ پہ رکھتا تھا
یہی وجہ تھی کہ مجھے چومتے ججھکتا تھا
وہ آشنا میرے ہر کرب سے رہا ہر دم
جو کھل کے رو نہیں پایا مگر سسکتا تھا

جڑی تھی اسکی ہر اک ہاں فقط میری ہاں سے
یہ بات سچ ہے میرا باپ کم نہ تھا ماں سے

ہر اک درد وہ چپ چاپ خود پہ سہتا تھا
تمام عمر وہ اپنوں سے کٹ کے رہتا تھا
وہ لوٹتا تھا کہیں رات کو دیر سے کہ دن بھر
وجود اسکا پسینے میں ڈھل کے بہتا تھا

گلے پھر بھی تھے مجھے ایسے چاک داماں سے
یہ بات سچ ہے میرا باپ کم نہ تھا ماں سے

پرانا سوٹ پہنتا تھا کم وہ کھاتا تھا
مگر کھلونے میرے سب خرید لاتا تھا
وہ مجھے سوئے ہوئے دیکھتا تھا جی بھر کے
نہ جانے سوچ کے وہ کیا کیا مسکراتا تھا
میرے بغیر تھے سب خواب اسکے ویراں سے

یہ بات سچ ہے میرا باپ کم نہ تھا ماں سے

↔↔↔↔↔↔↔​

پیکر تھا وفا کا محبت کا خدا تھا
وہ شخص زمانے میں سب سے جدا تھا

چاہت کے خزانے تھے ہر لفظ میں اس کے
دامن میرا اس نے دعاوں سے بھرا تھا

مجھ کو نہیں دیکھا کڑی دھوپ نے چھو کر
بابا میرا دنیا میں مجھے ایسا جو ملا تھا

فکریں نہ زمانے کی کبھی پاس بھی آئیں
میرا درد میری ہستی سے ڈرتا ہی رہا تھا

جب تک رہا سانسوں کا بسیرا میرا بابا
تب تک میں غموں سے بچا ہی رہا تھا

اس شام کی حدت میرے دل دے نہیں جاتی
جس شام تیرا سایہ میرے سر سے اٹھا تھا

↔↔↔↔↔↔↔

Death Love Poetry in Urdu

Death love poetry

Death love poetry

اکیلے رات بھر تڑپتا رہا مریضِ عشق
نہ تم آئی، نہ نیند آئی، نہ چین آیا، نہ موت آئی

Akely Raat Bhar Tarpta Raha Mrez-e-Ishq
Na Tum Aai, Na Need Aai, Na Chain Aaya, Na Maut Aai

↔↔↔↔↔↔↔

Khuda keray maut aa jay, per kisi pe din na aay

خدا کرے موت آجاۓ
لیکن کسی پر دل نہ آۓ

Khuda Krai Mout Aajae
Lakin Kisi Par Dill Na Aye

↔↔↔↔↔↔↔

انتظار ہے ہمیں تو بس اپنی موت کا
انکا وعدہ ہے کے اس دن ملاقات ہوگی

Intezaar Hai Humein Toh Bas Apni Maut Ka
Unka Vaada Hai Ke Us Din Mulaaqaat Hogi

↔↔↔↔↔↔↔

اپنا بہت خیال رکھا کرو
ابھی میں نے تمہیں موت کا غم دینا ہے

Apna Bohat Khayal Rakha Kro
Abhi Mai Nai Tumahi Mout Ka Gham Daina Hai

↔↔↔↔↔↔↔

مجھے تو موت سے پیار ہے زندگی کا کیا کروں
زندگی تو وہ جیتے ہیں جن کو محبت ملا کرتی ہے

Mujhy Tou Mout Sai Pyar Hai Zindagi Ka Kya Kro
Zindagi Tou Wo Jetai Hai Jin Ko Muhabbat Mila Krti Hai

↔↔↔↔↔↔↔

موت سے کب مرنے والے تھے ہم
بول تیری زبان کے ہم کو مار گئے

Mout Sai Kaab Marny Waly Thai Hum
Bol Teri Zuban Kai Hum Ko Maar Gae

↔↔↔↔↔↔↔

میں چاہتی ہوں میری عمر بھی اُسے لگ جائے
میری خواہش ہے وہ میری موت کا دُکھ دیکھے

Mein Chahti Hon Meri Umer Bhi Use Lag Jay
Meri Khwaish Hy Woh Meri Maut Ka Dukh Dekhy

↔↔↔↔↔↔↔

میں نے خواب میں موت دیکھی
رونے والوں میں تم نہیں تھے

Mai Nai Khwab Mai Mout Daikhi
Ronay Walo Mai Tum Nai Thai

↔↔↔↔↔↔↔

اے درد تجھے الوداع
وہ دیکھو موت میری ملاقات پے آئی ہے

Aye ‘Dard’ TujHy ALwiDaa…
Wo DekHo Mout Meri Mulaqaat Pe Ai Hai

↔↔↔↔↔↔↔

مجھے اپنے مرنے کا غم نہیں لیکن
ہاۓ! میں تجھ سے بچھڑ جاؤں گا

Mujy Apny Marny Ka Gham Nahi Lakin
Hae! Mai Tujh Sai Bichar Jao Ga

↔↔↔↔↔↔↔

Add Comment