Top Motivational Poetry in Urdu | Best Inspirational Shayari

Find best motivational poetry in urdu that motivate you to work hard and pull you up. Our best collection of inspirational shayari and motivational quotes in urdu for students and younger whose disappoint from life. We hope after reading you shall be able to face difficulties on your life with humble and leave obstacles. Read and share

2 Lines Motivational Poetry in Urdu

motivational poetry in urdu

Motivational poetry in urdu

منزل سے آگے بڑھ کر منزل تلاش کر
مل جائے تجھ کو دریا تو سمندر تلاش کر

Munzil se Agay Barh kar Munzil Talash Kar
Mil jaye Tuj ko Darya Tou Samndar Talash Kar

urdu motivational shayari

Urdu motivational shayari

طوفانوں سے آنکھ ملاو، سیلابوں پر وار کرو
ملاحوں کے چکر چھوڑو، تیر کے دریا پار کرو

Tufanoon say aankh milao, sailabon per war karo
Mallahon kay chakar chorro, teir kay darya par karo

students motivational poetry

Students motivational poetry

کون کہتا ہے کہ موت آئی تو مَر جاوں گا
میں تو دریا ہوں ، سمندر میں اُتر جاوں گا

Kon kehta hai keh maut aai tu marr jaon ga
Main tu darya hoon samundar main utar jaon ga

2 lines motivational poetry

2 lines motivational poetry

ڈوبنا پڑتا ہے اٌبھرنے سے پہلے
غروب ہونے کا مطلب زوال نہیں ہوتا

Dobna parrta hai ubhernay say pehlay
Gharob honay ka matlab zawal nahi hota

———————–

زندگی کی یہی ریت ہے
ہار کے بعد ہی جیت ہے

Zindagi Ki Yehi Reet Hai,
Haar Ke Baad Hee Jeet Hai

———————–

شاخوں سے ٹوٹ جائیں وہ پتے نہیں ہیں ہم
آندھی سے کوئی کہہ دے کہ اوقات میں رہے

Saakh se Toot jayien Wo pattay Nahi hain hun
Aandhi se Koi Keh De ke Auqaat mie rahay

———————–

jo yaqeen ki rah pe chal parha

جو یقین کی راہ میں چل پڑے
انہیں منزلوں نے پناہ دی

Jo Yaqeen Ki Rah mie Chal Paray
Unain Manzlo Ne Pannah Di

———————–

شاخیں رہیں تو پھول بھی پتے بھی آئیں گے
یہ دن اگر برے ہیں تو اچھے بھی آئیں گے

Saakhain Rahain Tou Phool Bhi, Pattay Bhi Ayien Gay
Yeh Din Agar Burray Hain Tou Achay Bhi Ayien Gay

———————–

جب چل پڑے ہو سفر کو تو پھر حوصلہ رکھو
صحرا کہیں، کہیں پہ سمندر بھی آئیں گے

Jab Chal Parray Ho Safar Ko Tou Phir Hosla Rakho
Sehraa Kaheen , Kaheen pe Samaandar bhi Ayien Gay

———————–

motivational poetry iqbal

Motivational poetry iqbal

کوئی قابل ہو تو ہم شان کئی دیتے ہیں
ڈھونڈے والوں کو دنیا بھی نئی دیتے ہیں

Koi Qabil Ho Tou Hum Shan e Kaie Detay Hain
Dhondnay Walon Ko Duniya Bhi Nai Detay hain

———————–

نہیں تیرا نشیمن قصر سلطانی کے گنبد پر
تو شاہیں ہے بسیرا کر پہاڑوں کی چٹانوں میں

Nahi Tera nasheman Qasar e Sultani ke Gumbad Par
Toun Shaheen Hay Baseera Kar Paharon Ki Chitano mie

———————–

عقابی روح جب بیدار ہوتی ہے جوانوں میں
نظر آتی ہے ان کو اپنی منزل آسمانوں میں

Auqaabi Rooh Jab Bedaar Hoti hay Jawano Mie
Nazar Aati hay Un Ko Apni Manzil Aasmaano Mie

———————–

کھول آنکھ ، زمیں دیکھ،فلک دیکھ، فِضا دیکھ
مشرق سے نِکلتے ہوئے سورج کو ذرا دیکھ

Khol aankh, zameen dekh, falak dekh, fiza dekh
Mashriq say nikalty huwy suraj ko zara dekh

———————–

ummeed kabhi mat choro

Inspirational poetry in urdu

وقت اچھا بھی آئے گا ناصر
غم نہ کر زندگی پڑی ہے ابھی

Waqt Acha Bhi Aye Ga Nasir
Gham Na Kar Zindgi Parri hay Abhi

———————–

ملے گا منزلِ مقصود کا اُسی کو سُراغ
اندھیری شب میں ہے چیتے کی آنکھ جس کا چراغ

Milay ga manzal e maqsood ka usi ko suragh
Andheri shab main hay cheetay ki aankh jis ka chiragh

———————–

مٹا دے اپنی ہستی کو ، اگر کُچھ مرتبہ چاہے
کہ دانہ خاک میں مِل کر گُلِ گُلزار ہوتا ہے

Mita day apni hasti ko agar kuch martaba chahay
Kay dana khak main mil kar gul e gulzar hota hay

———————–

nothing impossible poetry urdu

وقت سے پہلے حادثوں سے لڑا ہوں
میں اپنی عُمر سے کئی سال بڑا ہوں

Waqt say pelhay haddson say larra hoon
Main apni umer say kai saal barra hoon

———————–

رنج سے خوگر ہوا انساں تو مٹ جاتا ہے رنج
مشکلیں مجھ پر پڑیں اتنی کہ آساں ہو گئیں

Ranj say khu-gar ho insan tu mitt jata hay ranj
Mushkilain mujh per parin itni keh aasan ho gain
Miza Ghalib

———————–

اُمیدیں یوں نہ توڑو تُم، کہ یہ قانون ہے ربّ کا
سَحر لازم ہے گویا شب میں کِتنی ہی طوالت ہو

Umeedain youn na tooro tum keh yeh qanon hai rabb ka
Sahar lazam hai goya shab main litni hi tawalat ho

———————–

4 Lines Motivational Poetry in Urdu

students hope poetry

4 lines motivational poetry

کشتی بھی نہیں بدلی دریا بھی نہیں بدلہ
اور ڈوبنے والوں کا جذبہ بھی نہیں بدلہ
ہے شوق سفر ایسا اک عرصہ سے یارو
منزل بھی نہیں پائی رستہ بھی نہیں بدلہ

Kashti bhi nahi badli Daryaa bhi nahi badla
Aur Doobnay walon ka Jazba Bhi Nahi Badla
Hay Shoq e Safar ek Arsay Se Yaaro
Munzil Bhi Nahi Pai, Rastaa Bhi Nahi Badla

———————–

خواہش سے نہیں گِرتے پھل جھولی میں
وقت کی شاخ کو میرے دوست ہلانا ہو گا
کچھ نہیں ہو گا اندھیروں کو بُرا کہنے سے
اپنے حِصّے کا دِیا خود ہی جلانا ہو گا

Khwahish say nahi girtay phal jholi main
Waqt ki shakh ko meray dost hilana ho ga
Kuch nahi ho ga andheron ko bura kehnay say
Apnay hissay ka diya khud hi jalana ho ga

———————–

نہ منہ چھپا کے جئے ہم نہ سر جھکا کے جئے
ستم گروں کی نظر سے نظر ملا کے جئے
اب ایک رات اگر کم جئے تو کم ہی سہی
یہی بہت ہے کہ ہم مشعلیں جلا کے جیئے

Nah Munnh Chupa ke jiye na Sir jhukka ke jiye
Sitm garom ke nazar se nazar mila ke jiye
Ab aik raat agar kam jiye to kam hi sahee
Yeh hi bhot hay k hum Mishalain jala ke jiye

———————–

Motivational Poem in Urdu

motivational shayari urdu

Motivational shayari urdu

ہم کو مٹاسکے یہ زمانے میں دم نہیں
ہم سے زمانہ خود ہے زمانے سے ہم نہیں

Hum Ko Mitta Sakkay Yeh Zamanay Mie Dum Nahi
Hum se Zamana Khud hay Zamanay se HUm Nahi

بے فائدہ الم نہیں، بیکار غم نہیں ​
توفیق دے خدا تو یہ نعمت بھی کم نہیں ​

Be Faida Alam Nahi, Bekar Gham Nahi
Tufeeq De Khuda Tu Ye Nemat Bhi Kam Nahi

میری زباں پہ شکوہٴ اہل ستم نہیں ​
مجھ کو جگادیا، یہی احسان کم نہیں ​

Meri Zuban Pe Shikwa Ahl-e-Sitam Nahi
Mujh Ko Jagaya Diya, Yehi Ehasan Kam Nahi

یا رب! ہجوم درد کو دے اور وسعتیں ​
دامن تو کیا، ابھی مِری آنکھیں بھی نم نہیں ​

Yar Rab, Hajoom-e-Dard Ko De Aur Wusatain
Daman Tu Kia, Abhi Meri Aankhain Bhi Nam Nahi

زاہد! کچھ اور ہو نہ ہو میخانہ میں، مگر ​
کیا کم یہ ہے، کہ شکوہٴ دیروحرم نہیں ​

Zahid! Kuch Aur Ho Na Ho Mekhana Mein, Magar 
Kia Kam Ye Hai, Kh Shikwa Dero Haram Nahi

مرگِ جگر پہ کیوں تِری آنکھیں ہیں اشک ریز​
اک سانحہ سہی، مگر اتنا اہم نہیں

Marg-e-Jigar Ye Kion Teri Aankhain Hain Ashq Raiz
Ik Saneha Sahi, Magar Itan Eham Nahi

Jigar Murad Abadi​

———————–

Add Comment